باورچی خانے کی صافیاں فوڈ پوائزننگ کا سبب

 

ایک تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ گھر میں صافی کے طور پر بیک وقت کئی کاموں میں استعمال ہونے والے تولیے فوڈ پوائزننگ کا سبب بن رہے ہیں۔
موریشیئس یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے 100 باورچی خانوں کے ان تولیوں کی جانچ کی جو ایک ماہ سے استعمال میں تھے۔
تحقیق میں معلوم چلا کہ مختلف کاموں کے لیے استعمال ہونے والے تولیے میں ای کولی کے پائے جانے کے زیادہ امکانات بطور خاص ان تولیے یا صافیوں میں ملے جن کا برتن پوچھنے، سلیب یا فرش کو صاف کرنے اور ہاتھ خشک کرنے جیسے کاموں کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

بھیگے تولیوں یا پھر جہاں گوشت کھایا جاتا ہے وہاں ایسے جراثیم کے پائے جانے کے بھی امکانات زیادہ ہوتے ہیں۔

 

ایک ہی کپڑے کو مختلف قسم کے کاموں میں استعمال کرنے کے نتیجے میں امراض پھیلانے والے جرثوموں کے پھیلنے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے جس سے فوڈ پوائزننگ ہو سکتی ہے۔
امریکی حکومت برتن پونچھنے والے کپڑے، چائے پوش، سپنج اور اوون میں استعمال ہونے والے دستانوں کو پابندی سے بدلتے رہنے اور انھیں استعمال سے پہلے خشک کرنے کی ترغیب دیتی ہے۔
یہ تحقیق جارجیا کے شہر اٹلانٹا میں امریکن سوسائٹی فار مائکروبائیولوجی کے اجلاس میں پیش کی جا رہی ہے۔
سائنسدانوں نے تولیے یا صافی میں پائے جانے والے بیکٹیریا کی افزائش کی تاکہ یہ پتہ چل سکے کہ ان کی موجودگی کتنی ہو سکتی ہے۔
جتنے تولیے یا صافیاں یکجا کیے گئے تھے ان میں سے 49 فیصد میں بیکٹیریا پیدا ہوا اور ان میں بڑے خاندان کے حساب سے اضافہ دیکھا گیا یعنی جتنے ہاتھ اتنے زیادہ بیکٹیریا کی موجودگی۔
یہ بھی پڑھیے

 

ان میں سے

فیصد میں کولی بیکٹیریا پایا گيا جس میں ایک ای کولی بھی شامل ہے۔ ای کولی ایسا بیکٹیریا ہے جو انسانوں اور جانوروں کی آنتوں میں پایا جاتا ہے۔ ان میں سے زیادہ تر بے ضرر ہوتے ہیں لیکن بعض سنگین انفیکشن اور فوڈ پوئزننگ کا سبب بن سکتے ہیں۔