کامن ویلتھ گیمز: پاکستان اور انگلینڈ کا ہاکی میچ برابری پر ختم، سیمی فائنل تک رسائی کے امکانات معدوم

 

 

آسٹریلیا کے شہر گولڈ کوسٹ میں جاری کامن ویلتھ گیمز میں ہاکی کے مقابلے میں اتوار کو پاکستان اور انگلینڈ کے مابین گروپ میچ دو دو گول سے برابر رہا۔
پاکستان کی جانب سے ارسلان قادر نے اور علی مبشر نے ایک ایک گول سکور کیا جبکہ انگلینڈ کی جانب سے مارک گلیگ ہورن اور سیم وارڈ نے گول سکور کیے۔
ٹورنامنٹ میں یہ پاکستان کا تیسرا میچ تھا اور تینوں میں ڈرا کرنے کے بعد پاکستان کے سیمی فائنل میں رسائی کے امکانات کافی کم ہو گئے ہیں۔
اس میچ میں دونوں ٹیموں نے قدرے محتاط انداز میں شروعات کیں اور پہلے دو کوارٹرز میں مقابلہ بغیر کسی گول کے برابر تھا اور دونوں ٹیموں نے زیادہ جارحانہ انداز نہیں اپنایا۔
اس بارے میں مزید پڑھیے

لیکن تیسرا کوارٹر شروع ہوتے ہیں کھیل میں واضح تیزی دیکھنے میں آئی اور پاکستان کی جانب سے ارسلان قادر نے فیلڈ گول سکور کر کے پاکستان کو سبقت دلا دی۔
لیکن تین منٹ بعد انگلینڈ کی جانب سے گلیگ ہورن نے پینالٹی کارنر پر گول کر کے میچ برابر کر دیا۔
اس کے بعد دونوں ٹیموں نے ایک دوسرے پر تابڑ توڑ حملے شروع کر دیے اور مقابلہ ایک سمت سے دوسری سمت تک شروع ہو گیا۔
آخری کوارٹر کے آغاز پر پاکستان نے گول سکور کرنے کا سنہرا موقع ضائع کر دیا اور پاکستان کو اس کا خمیازہ فوراً بھگتنا پڑا جب اگلے ہی منٹ میں انگلینڈ کی جانب سے سیم وارڈ نے پینالٹی کارنر پر اپنی ٹیم کے لیے دوسرا گول کر دیا۔

اس موقع پر پاکستان نے ایک بار پھر اپنی ثابت قدمی دکھاتے ہوئے انگلینڈ کے گول پر حملے جاری رکھے اور میچ ختم ہونے سے تین منٹ قبل امپائر ریویو کا مطالبہ کیا جس کی مدد سے انھیں پینالٹی کارنر ملا اور علی مبشر نے گول کر کے میچ برابر کر دیا۔

آخری لمحات میں انگلینڈ کی ٹیم نے گول کر دیا لیکن امپائر نے ان کی اپیل مسترد کر دی۔
پاکستان ٹورنامنٹ میں اپنا آخری میچ 11 اپریل کو ملائیشیا کے خلاف کھیلے گا۔ واضح رہے کہ اس سے قبل پاکستان نے ویلز کے خلاف 1-1 جبکہ انڈیا کے خلاف 2-2 سے میچ ڈرا کیے تھے۔