اگر شادی کی تو زندگی ختم ہو جائے گی: ناز نوروزی

پاکستان میں فلمی صنعت کی بحالی کے بعد جہاں شہریوں نے سینیما گھروں کا رخ کیا ہے، وہیں اب دوسرے ممالک کے اداکار بھی یہاں کام کرنے میں دلچسپی کا اظہار کر رہے ہیں۔ ان میں ایرانی نژاد اداکارہ ناز نوروزی بھی شامل ہیں۔

ناز نوروزی نے بالی وڈ سے فلمی دنیا میں قدم رکھا۔ پاکستان میں ان کی پہلی فلم ’مان جاؤ نہ‘ جمعے کو ریلیز ہو رہی ہے، جس میں ان کا کردار ایک ایسی لڑکی کا ہے جو شادی نہیں کرنا چاہتی۔ بقول ناز کے یہ ایک مزاحیہ اور فیملی فلم ہے۔

’عام زندگی میں یہ سارے مسائل ہیں۔ میں بھی ایسا ہی سوچتی ہوں ابھی مجھے شادی نہیں کرنی بلکہ ابھی کام کرنا ہے کیونکہ مجھے لگتا ہے کہ اگر شادی کروں گی تو زندگی ختم ہو جائے گی۔ فلم کا مرکزی کردار رانیہ بھی یہی سوچتی ہے۔‘

ناز نوروزی کو جب پاکستان میں فلم کی پیشکش ہوئی تو اسے قبول کرنا ان کے لیے ایک امتحان بن گیا۔
ناز بتاتی ہیں کہ کئی لوگ کہہ رہے تھے کہ پاکستان کیوں جا رہی ہو، وہاں تو جنگ جاری ہے لیکن فلم کے ڈائریکٹر اور فلم کے ہیرو عدیل چوہدری مجھے روز فون کرکے ہمت بندھاتے رہے اور آخر کار میں نے پاکستان آنے کا فیصلہ کر ہی لیا۔

ناز کہتی ہیں ’یہاں آکر دیکھا تو حالات بہت مختلف لگے کراچی کافی حد تک ممبئی جیسا ہے۔‘
ناز نوروزی کی پیدائش ایران کے شہر تہران میں ہوئی جس کے بعد ان کا خاندان جرمنی منتقل ہوگیا، جہاں ان کی پرورش ہوئی۔
ناز کے مطابق انہیں بچپن سے ہی فلموں میں کام کرنے کا شوق تھا۔ ’جب میں نے بالی وڈ کی فلمیں دیکھنا شروع کیں تو میں نے سوچا مجھے وہاں ہی جانا ہے اور یہی کام کرنا ہے۔ یہاں کی محبت بھری کہانیاں اور ڈانس مجھے پسند ہیں اور یہ ایرانی کلچر کے بھی قریب ہیں۔‘

ناز نوروزی فارسی کے علاوہ جرمن، انگریزی، فرینچ، ہندی اور اردو جانتی ہیں جبکہ پنجابی سیکھ رہی ہیں، لیکن ہندی ان کے لیے چیلنج تھی۔
ان کا کہنا تھا ’جب میں ممبئی آئی تو سوچا کہ مجھے ہندی نہیں سیکھنی۔ فلم انگریزی میں کروں گی وہ ڈبنگ کر لیں گے، لیکن پھر مجھے پتہ چلا کہ ایسا نہیں ہوتا ہندی سیکھنی پڑے گی۔‘
’پہلے میں نے اپنے طور پر سیکھنی شروع کی پھر ٹیونش کلاسیں لیں، ایک ایسا بھی وقت آیا کہ مجھے رونا آگیا کہ مجھ سے نہیں ہو رہا ہے لیکن پھر میں نے سوچا کہ اگر فلم میں کام کرنا ہے اور یہی کام کرنا ہے تو ہندی تو سیکھنی ہی ہو گی بالآخر دو سال میں ہندی سیکھ ہی لی۔‘

ہندی کے علاوہ ناز نوروزی کے لیے دوسرا چیلنج ڈانس تھا۔ بقول ان کے انھوں نے سوچا بھی نہیں تھا کہ ڈانس اتنا اہم ہے۔
’مجھے ایک سال تک ڈانس کی کلاسیں لینا پڑیں کیونکہ مجھے سب سے بہتر ہونا تھا۔ بالی وڈ کی کئی اداکارائیں ہیں جو بہت اچھا ڈانس کرتی ہیں۔‘
ایران کی فلم اور بالی وڈ میں سے ناز نوروزی نے بالی وڈ کا انتخاب کیا ہے۔ ان کے مطابق ’اگر آپ باہر کام کرنے کا انتخاب کرتے ہیں تو پھر ایران میں نہیں کرسکتے کیونکہ وہاں حجاب اور دوسرے معاملات آڑے آ جاتے ہیں۔‘

’ایران میں کئی پابندیاں ہیں لیکن آپ دیکھیں کہ ہمیں بہت سارے آسکرز مل چکے ہیں۔ ہم اچھی فلمیں بنا رہے ہیں لیکن عالمی سیاسی سطح پر جو کچھ ہو رہا ہے اس کی وجہ سے ہم کوئی بڑا نام نہیں بن سکے۔‘
ناز نوروزی کو دیپیکا اور کنگنا پسند ہیں جبکہ سلمان خان کو وہ ’ایوری بڈیز ڈارلنگ‘ جبکہ فواد خان کو ’ہاٹ ہیرو‘ قرار دیتی ہیں۔
ناز نوروزی اداکاری کے ساتھ ماڈلنگ بھی کرتی ہیں۔