فائر اینڈ فیوری پڑھنے پر ٹرمپ کےحامیوں کا غم و غصہ

امریکی صدر ٹرمپ کی ٹیم نے گریمی ایوارڈز کی تقریب کے دوران صدر ٹرمپ کا مذاق اڑانے والی ایک ویڈیو کو شامل کیے جانے پر شدید برہمی کا اظہار کیا ہے۔
اس ویڈیو میں سابق امریکی صدارتی امیدوار ہلری کلنٹن کے ساتھ ساتھ شیئر اور سنوپ ڈوگ سمیت متعدد مشہور موسیقاروں کو حال ہی میں شائع ہونے والی مائیکل ولف کی کتاب ’فائر اینڈ فیوری‘ کے حصے پڑھتے ہوئے دیکھے جا سکتا ہے۔

گریمی ایوارڈز کی تقریب کے میزبان جیمز کورڈن نے مذاق کیا کہ وہ بہترین سپوکن ورڈ البم کا انعام جیتنے کے خواہاں تھے۔
تاہم ڈونلڈ ٹرمپ جونئیر نے اس سکیٹ کا مذاق اڑایا اور کہا کہ یہ کتاب فیک نیوز ہے۔

اتوار کی شام کو نشر ہونے والی گریمی ایوارڈز کی تقریب میں اس ویڈیو کے دوران ہلری کلنٹن کو صدر ٹرمپ کی فاسٹ فوڈ کی پسند کے بارے میں چند جملے پڑھتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔
انھوں نے پڑھا کہ صدر ٹرمپ کو ’کافی عرصے سے زہر دیے جانے کا خوف ہے۔ صدر ٹرمپ کے مکڈونلڈز پسند کرنے کی ایک وجہ یہ بھی ہے۔ کسی کو معلوم نہیں کہ وہ آ رہے ہیں اور کھانا پہلے سے ہی باحفاظت تیار ہوتا ہے۔‘

اگرچہ تقریب کے دوران ہلری کلٹن کے آنے کی سراہا گیا مگر امریکہ کی اقوام متحدہ میں سفیر کو یہ کچھ زیادہ پسند نہ آیا۔

ادھر ڈونلڈ ٹرمپ جونئیر نے اس موقعے پر ہلری کلنٹن کے انتخابات میں شکست کا بھی ذکر کیا۔

ڈونلڈ ٹرمپ کے حامیوں کے لیے تین گھنٹوں کی اس تقریب میں بہت کچھ ناپسند آیا ہوگا۔
پاپ سٹار کامیلا نے امریکی میں امیگرینٹس یعنی تارکینِ وطن کے دفاع میں ایک تقریر کی۔ انھوں نے خصوصی طور پر ڈریمرز پروگرام پر اپنی توجہ مرکوز کی۔
ڈریمر پروگرام سابق امریکی صدر براک اوباما نے متعارف کروایا تھا اور صدر ٹرمپ اسے منسوخ کرنے کا اعلان کر چکے ہیں۔
اس کے بعد معروف بینڈ یو ٹو نے پرفارم کیا اور سٹیج سے جاتے جاتے بینڈ کے سربراہ بونو نے امریکی صدر کے افریقی ممالک کے حوالے سے ایک اور بیان کا تذکرہ کر دیا۔ ’وہ گھٹا ممالک انتہائی رحمت والی ہیں کیونکہ انھوں نے ہمیں امریکین ڈریم دیا۔‘