علمِ جمہوریت اور شہریت کو نصاب کا حصہ بنانے کے لیے سینیٹ میں قرارداد منظور

پاکستان کی ایوان بالا میں ملک میں ڈیموکریٹک سوک ایجوکیشن یعنی ‘جمہوریت اور شہریت’ کو تعلیمی نصاب کا لازمی حصہ بنانے کے لیے قرارداد منظور کی ہے۔

بی بی سی کی نامہ نگار ارم عباسی کے مطابق پیر کو سینٹر سحر کامران کی جانب سے پیش کردہ قرارداد میں کہا گیا کہ بچوں میں آگاہی کے لیے نہ صرف آئین میں شامل بنیادی حقوق کو درسی کتابوں میں شامل کیا جائے بلکہ پارلیمانی جمہوریت، بنیادی حقوق اور پاکستان میں آئین کے موضوعات کو نصابی اور اضافی سرگرمیوں میں شامل کیا جائے۔

قرارداد میں مزید کہا گیا ہے کہ لوگوں میں آئین کے حوالے سے شعور پیدا کرنےکے لیے میڈیا اپنا کردار ادا کرتے ہوئے آگاہی کے لیے وقت مخصوص کرے۔
سینیٹ سے منطور ہونے والی قرارداد کے مطابق اس مقصد کے لیے میثاق جمہوریت میں وضع کردہ قومی جمہوری کمیشن قائم کیا جائے۔