بچوں کے لیے کریئر کی قربانی نہیں دی: کاجول

‘دل والے دلہنيا لے جائیں گے’ ‘بازی گر’ اور ‘کچھ کچھ ہوتا ہے’ جیسی مقبول فلموں کی ہیروئین کاجول کا کہنا ہے کہ انھوں نے اپنے بچوں کے لیے فلمی کریئر کی قربانی نہیں دی ہے۔
90 کے عشرے میں جب اداکارہ کاجول کا فلمی کریئر عروج پر تھا تب انھوں نے اداکار اجے دیوگن سے شادی کر لی اور اس کے بعد منتخب فلمیں کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

بی بی سی کے ساتھ خاص بات چیت میں کاجول نے اس بات سے انکار کیا کہ ان کے بچوں کی ذمہ داریاں ان کے فلمی کریئر کے آڑے آئیں۔
کاجول کہتی ہیں: ‘میں نے اپنے بچوں کے لیے کوئی قربانی نہیں دی۔ میں نے بچے پیدا کیے کیونکہ میں ان کی ذمہ داری لینا چاہتی تھی۔ یہ کوئی قربانی نہیں ہے۔ وہ میرے بچے ہیں اور میں مرتے دم تک ان سے محبت کروں گی۔ میرا خاندان اور بچے میری ترجیح اور میری زندگی ہیں۔ میرا فلمی کام میری زندگی کا تو صرف ایک حصہ ہے۔’

بالی وڈ کے کئی اداکاروں کے بچے میڈیا میں کثرت سے دکھائے جاتے ہیں تو کیا کاجول نے بیٹی نائيسا اور بیٹے یگ کو میڈیا کی نظروں سے دور رکھنے کا فیصلہ کیا ہے؟
اس پر کاجول کہتی ہیں: ‘مجھ سے اکثر لوگ پوچھتے ہیں کہ کیا نائيسا فلموں میں آئے گی؟ وہ ابھی صرف 14 سال کی ہے۔ میں بچوں پر کسی طرح کا دباؤ، میڈیا یا لوگوں سے نہیں چاہتی، اس لیے انھیں لائم لائٹ سے دور رکھتی ہوں۔ میڈیا کی نظروں میں آ جانے کے بعد دانستہ یا نا دانستہ طور پر دباؤ آ ہی جاتا ہے۔ اس لیے میں نے اور اجے دیو گن نے طے کیا ہے کہ ہم انھیں میڈیا سے دور رکھیں گے۔ میں انھیں کریئر کے انتخاب کی آزادی دینا چاہتی ہوں۔ وہ اپنی زندگی میں کیا کرنا چاہتے ہیں یہ صرف ان کا اپنا فیصلہ ہو گا۔’

فلم انڈسٹری میں 25 برس مکمل کرنے والی کاجول کے مطابق فلم انڈسٹری میں سٹار اور سٹارڈم کے معنی بدل گئے ہیں۔
ان کا کہنا ہے کہ پہلے فلمی سٹارز کے آس پاس راز، اچھوتا پن اور سحر انگیزی کا ماحول رہتا تھا جو اب نہیں ہے۔ آج کے سٹار تک پہنچنا آسان ہے۔ وہ عام لوگوں سے زیادہ قریب ہوئے ہیں۔
کاجول کا کہنا ہے کہ فلم انڈسٹری میں بہت سی تبدیلیاں آئی ہیں۔ اس تبدیلی میں فلم انڈسٹری کے لوگ منقسم ہونے کے ساتھ ساتھ کاروباری بھی ہو گئے ہیں۔ ان کے مطابق فلمی صنعت میں کئی طرح کی خوبیاں آئی ہیں اور نئے لوگوں کی آمد بھی ہوئی ہے۔

ایک وقت تھا کہ کاجول نے علاقائی فلمیں نہ کرنے کا فیصلہ کیا تھا لیکن اب وہ اداکار دھنس کے ساتھ تمل فلم میں نظر آئیں گی۔ علاقائی زبانوں کی پیچیدگیوں اور مشکلات کے سبب کاجول نے علاقائی سینیما سے دور رہنے کا فیصلہ کیا تھا لیکن اب کاجول کو لگتا ہے کی وہ چینی زبان میں بھی فلمیں کر سکتی ہیں۔

اداکار رجنی کانت کی بیٹی سوندريا رجنی کانت کی ہدایت میں بننے والی فلم ‘وی آئی پی 2 للکار’ میں کاجول تمل فلموں کے اداکار دھنس کے ساتھ نظر آئیں گی۔